محاوروں کو جملوں میں استعمال کیجئے ۔ ۔ ۔

سوال  : درجِ ذیل محاورں کو جملوں میں استعمال کیجئے ۔ ۔  ۔

  • بال بال قرضے میں جکڑنا
  • دانت کھٹے کرنا
  • پانچوں انگلیاں گھی میں
  • کیچڑ اُچھالنا
  • آسمان سے باتیں کرنا

معلوم تھا کہ یہ آپ کے بس کا روگ نہیں ہے ۔۔۔ اس لئے آپ کے لئے ہم جوابا ت کے ساتھ حاضر ہیں 




<<< پچھلا صفحہ اگلا صفحہ >>>

محاوروں کو جملوں میں استعمال کیجئے ۔ ۔ ۔ پہ 8 تبصرے ہو چکے ہیں

  1. hmm....waqayee..pagal tu koi orr he nikla...

    ReplyDelete
    Replies
    1. ہاہاہا، کافی پرلطف جوابات ہیں۔

      Delete
  2. بال بال قرضے میں جکڑنا : اس غریب آدمی کا بال بال قرضے میں جکڑا ہوا تھا پھر بھی اس نے بھوکے فقیر کو اپنی جیب سے کھانا کھلا کر انسانیت کا مظاہرہ کیا۔
    دانت کھٹے کرنا : افغان مجاہدین نے بےجگری سے لڑتے ہوئے اپنے ملک پر زبردستی قابض فوجیوں کے دانت کھٹے کر دیے۔
    پانچوں انگلیاں گھی میں : لالچی اور بےغیرت آدمی کو کسی ملک کی بادشاہت ایک دن کے لیے بھی مل جائے تو اس دن اس کی پانچوں انگلیاں گھی میں ہوتی ہیں۔
    کیچڑ اچھالنا : سیاسی انتخابات کے موقع پر اکثر سیاست دانوں کو ایک دوسرے پر کیچڑ اچھالتا عموماً دیکھا گیا ہے۔
    آسمان سے باتیں کرنا : آجکل کے زمانے میں تو مہنگائی آسمان سے باتیں کر رہی ہے۔

    ReplyDelete
  3. تعریف لے لئے بہت بہت شکریہ ہاجرہ بہن ۔ ۔ ۔ ہا ہا ہا ۔ ۔ ۔ ۔ ۔

    بس اسی طرح بلا گ پر تشریف لا کر حوصلہ افزائی کرتے رہیئے گا ۔

    جزاک اللہ

    ReplyDelete
  4. شاید آپ صید صاحب یا نعمان صاحب ہیں ۔ ۔

    بڑی خوشی ہوئی آپ کو اس ناچیز کے بلاگ پر دیکھ کر۔۔

    بہت بہت شکریہ

    ReplyDelete
  5. ہاہاہاہا ۔خوب پر لُطف جوابات ہیں بھائی

    ملنے تو پورے نمبر چاہیے تھے ۔ ہاہاہاہا

    ReplyDelete
    Replies
    1. پورے تو نہیں البتہ ذہن کو زحمت اور اتنی محنت کے لئے کچھ نمبر تو ملنے ہی چاہیئے تھے ۔ ۔


      شکریہ

      Delete

اگر آپ (بلاگ اسپاٹ کی دنیا میں) نئے ہیں اور درج بالا تحریر پر آپ کا قیمتی تبصرہ کرنے کا ارادہ ہے تو ۔ ۔ ۔ Comment as میں جا کر“ANONYMOUS" پر کلک کر کے اپنا تبصرہ لکھ دیں – ہاں آخر میں اپنا نام لکھنا نہ بھولیں -

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔


تعمیر نیوز

اس بلاگ کی مذید تحاریر ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔

Powered by Blogger.